Friday , 23 February 2018
تازہ شمارے
You are here: Home » تاریخ » Cyrus The Great
Cyrus The Great

Cyrus The Great

ذوالقرنین (سائرس—  Cyrus The Great)

تاریخ کی بے خبری اور گمنام گوشوں میں جنم لینے والے کچھ افراد جاتے ہوئے اپنا نام اور تاریخ رقم کرجاتے ہیں۔
انہی میں سے ایک نام سائرس ہے، جسے قریباتمام بڑے مذاہب میں عزت و احترام سے یاد کیا جاتا ہے۔Computer Hope
چھبیس سو سال قبل بیت المقدس، بخت نصر کے ہاتھوں برباد ہوا اور عراق میں دریائے فرات کنارے بابل تاریخ کے صفحات پر نظر آنے لگا۔ سات عجائبات میں شامل بابل کے معلق باغاتHanging Gardensاسی نے بنوائے Computer Hopeاور بابل علم و ادب اور تہذیب و تمدن کا بہت بڑا مرکز قرار پایا۔
اس واقعے کے ٹھیک چھتیس سال بعد سائرس نام کا ایک شخص فارس کا بادشاہ ہوا جو اپنے ہم عصر زرتشت کے دین کا پیرو تھا جن کے بارے میں اغلب گمان یہی ہے کہ یہ دونوں وقت کے نبی تھے۔
سائرس کی تین مہمات کا ذکر آتا ہے۔
مشرق میں مکران دریائے سندھ تک، مغرب میں ازمیر(ترکی) جہاں بحیرہ ایجبیسن نے اس کے قدم روک دیئے اس کے قدم ٹھیک اسی جگہ رک جاتے ہیں جہاں بارہ سو سال بعد فاتح افریقا موسیٰ بن نصیر کے قدموں نے آکر رکنا تھا۔Computer Hope
اس کی تیسری مہم شمال کو ہوئی جہاں بحیرہ اسود اور بحیرہ خزر کے درمیان قفقاز کے مابین ایک “سد”تعمیر کی جو یاجوج اور ماجوج کے لئے ڈھال بنی۔ وہ ڈھال جسے چھٹی صدری ہجری میں چنگیز کے ہاتھوں روندا جانا تھا۔
یہ یہود کا محبوب ، فارس کا ہیرو سائرس تھا، قرآن نے جسے ذوالقرنین لکھا۔Computer Hope
اس کالم کی دستاویزی فلم دیکھنے کے لئے یہاں کلک کریں

About admin

  • voiceofislam786

    salam

Scroll To Top