Saturday , 20 October 2018
تازہ شمارے
You are here: Home » تاریخ » Era (Asar)
Era (Asar)

Era (Asar)

عصر  Era

زمانے میں کسی کو ثبات نہیں
قومیں ڈوبتی ابھرتی ہیں۔
عروج و زوال کے قصے ہیں۔
غرض مختلف اوقات میں تہذیبوں نے اتنے رنگ بکھیرے کہ مورخین اس کا احاطہ تک نہ کرسکے۔
معلوم آٹھ ہزار سالہ تاریخ نے ایسے نقش پھیلائے زمین کا شاید ہی کوئی گوشہ ان سے محفوظ رہ سکا ہو۔
ان واقعات کا امین عصر ہے اسی لئے کائنات اور تقدیر کے مالک اللہ نے عصر کی قسم کھا کر ایمان اور خسران پر اسے شاہد ٹھہرا کر رہتی دنیا تک ایجازی طور سے یہ بات ثابت کردی۔
افراد، اقوام و ملل،تہذیب و ثقافت یہ گزشتہ واقعات ہیں جسے عصر نے نہ صرف مثالی یا عبرت بنا ڈالا بلکہ قرآن کی صورت ایک ایسی دستاویز کائنات کو فراہم کی جس میں نہ صرف ہم ماضی کو دیکھ سکتے ہیں بلکہ جس سے مقصود حال، مستقبل کے تانے بانے بنے جانے ہیں، اسی لئے کہتے ہیں جو قومیں اپنا فیصلہ خود نہیں کرتی وقت ان کا فیصلہ کردیتا ہے۔
ملتیں اپنا مستقبل خود سے بناتی ہیں۔ زندگی پاس سے ڈھونڈ کر فراہم کرنی ہوتی ہے۔ یقین نہ آئےتو قرآن ہی کو دیکھ لیجئے جس نے اعجازی طور سے قانون بقا کے لئے انفا، عدل اور حق کو واحد حل بتلایا۔
فرصت کے لمحات میں اس نکتے پر غور کیجئے گا اس سے بہت سے پہلو باآسانی سمجھ میں آجائیں گے۔

اس کالم کو آواز کے ساتھ سنیں:

About admin

Scroll To Top